🌷سوال- کیا شب برات فیصلوں کی رات ہے؟

🌷سوال- کیا شب برات فیصلوں کی رات ہے؟

🍀جواب- شب برات فیصلوں کی رات نہیں ہے، کیونکہ فیصلوں کی رات رمضان میں آتی ہے، جس کو شب قدر کہتے ہیں، قران خود گواہی دیتا ہے کہ فیصلوں کی رات کونسی ہے

💥یقیناً ہم نے اسے بابرکت رات میں اتارا ہے- بے شک ہم ڈرانے والے ہیں- اس رات میں ہر مضبوط کام کا فیصلہ کیا جاتا ہے 💥

💦سورۃ الدخان3، 4💦

🌷سوال- بابرکت رات سے مراد کون سی رات ہے؟

🍀جواب- اس سے مراد شب قدر ہے جس میں قرآن کے نزول کا آغاز ہوا، پہلی وحی آپ صلی اللہ علیہ وسلم پر 21 رمضان کی رات آئی

💥بے شک ہم نے قرآن کو لیلتہ القدر میں نازل کیا💥

💦سورۃ القدر آیت 1💦

🌷سوال- قرآن کس مہینے میں نازل ہوا؟

🍀جواب- رمضان کے مہینے میں قرآن نازل کیا گیا

💦سورۃ البقرہ آیت 185💦

🌷سوال- تقدیر کے فیصلے کس رات میں ہوتے ہیں؟

🍀جواب- رمضان کی طاق راتوں میں سے ایک رات میں انسان کی تقدیر کے فیصلے ہوتے ہیں

   🌻سورۃ القدر🌻

🌷ہم نے اس قرآن کو شب قدر میں نازل کیا- اور تمہیں کیا معلوم شب قدر کیا ہے- شب قدر ہزار مہینوں سے بہتر ہے- اس میں روح (الامین)اور فرشتے ہر کام (کے انتظام) کے لیے اپنے پرودگار کے حکم سے اترتے ہیں- یہ (رات) طلوع فجر تک(امان اور) سلامتی ہے🌷

🌻 قرآن سے ثبوت ملتا ہے فیصلوں کی رات رمضان کی طاق راتوں میں سے ایک رات ہے جس کو شب قدر کہتے ہیں

🌻 شعبان کی 15 کی رات فیصلوں کی رات نہیں ہے، قران خود گواہی دیتا ہے قرآن رمضان کے مہینے میں نازل ہوا ہے

🌷سوال- کیا 15 شعبان عبادت کی رات ہے؟

🍀 جواب- قران سے پتہ چلتا ہے عبادت کی راتیں رمضان کی آخری 5 طاق راتیں ہیں، شعبان کی 15 کی رات نہیں ہے

🌷سوال- شب قدر یا لیلتہ المبارکہ کس رات کو کہتے ہیں؟

🍀جواب- جس رات قرآن کا نزول ہوا اس کو شب قدر یا لیلتہ المبارکہ کہتے ہیں، اس رات عبادت کا ثواب 83 سال 4 مہینے کے برابر ہے

🌷سوال- کیا شعبان کی 15 کا روزہ سنت سے ثابت ہے؟

🌻 حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم ایام بیض 13، 14، 15 کےروزے رکھتے تھے

🌻 اگر کوئی شعبان کے 13، 14، 15 کے روزے رکھتا ہے یہ سنت ہے

🌻 اگر کوئی صرف 15 شعبان کا روزہ رکھتا ہے تو یہ سنت سے ثابت نہیں ہے، کیونکہ صرف 15 شعبان کا روزہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم سے ثابت نہیں ہے

🌷شعبان کی 15 کی بدعات کون کون سی ہیں🌷

🌻 1- اس رات کو فیصلوں کی رات سمجھ کے عبادت کرنا

🌻 2- اس دن 15 کا روزہ رکھنا

🌻 3- اس دن کھانے پکا کے ختم دلوانا اور بانٹنا

🌻 4- بیٹیوں کو شبرات بھیجنا

🌻 5- حلوے مانڈے بنانا

🌻 6- آتش بازی کرنا

🌻 7- اس رات لوگوں سے معافی مانگنا

🌻 8- اس رات قبرستان جانا

اس رات کی عبادت کے حوالے سے جو احادیث بیان کی جاتیں ہیں وہ سب ضعیف ہیں

🌷شعبان کے مہینے میں ہمارے سالانہ اعمال اللہ کے حضور پیش ہوتے ہیں اس لیے ہمیں روزے زیادہ رکھنے چاہئیں نیکی کے کام زیادہ کرنے چاہئیں🌷

🍀اللہ تعالیٰ ہمیں ہر کام سنت طریقے سے کرنے کی توفیق دیں آمین- اس پوسٹ کو آگے ضرور سینڈ کریں🍀

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *