Archives

now browsing by author

 

Internet Billionaire Naveen Jain

Olymp Trading in Hindi

Parenting Guidance

Eid Milap Get together

In the name of Allah 
We cordially invite on the occasion of JIH’s  “EED MILAP” Get together 
On Sunday The 16th June 2019. By 11:00 am to 2:00 p.m.
At RJ Function plaza Near Water tank ( Agriculture office onwards)Old Malakpet HYDERABAD. 
Hindu, Muslim, Cristian & Sikh dignitaries will preside over the Function 
Lunch follows.
You are requested to attend: Jamaat e islami Hind,Malakpet & L.B.Nagar, Old Malakpet Division, HYDERABAD-T.S.INDIA.

Media Abhi Zinda Hai

#CowVigilantism

IqamateDeen

قرآن، اقامت دین اور مولانا مودودی ؒ

پروفیسر خورشید احمد

تجدید و احیاے دین، اسلامی تاریخ کی ایک روشن روایت اور عقیدہ ختم نبوت کا فطری نتیجہ اور دین اسلام کے مکمل ہونے کا تقاضا ہے۔ ہر دور میں اللہ تعالیٰ نے اپنے کچھ برگزیدہ بندوں کو اس توفیق سے نوازا کہ وہ دین کی بنیادی دعوت پر مبنی اللہ کے پیغام کو، نبی پاک صلی اللہ علیہ وسلم اور خلفاے راشدینؓ کے نمونے کی روشنی میں، اپنے دور کے حالات کا جائزہ لے کر بلاکم و کاست پیش کریں۔ دورِحاضر میں جن عظیم ہستیوں کو یہ سعادت حاصل ہوئی، ان میں مولانا سیّدابوالاعلیٰ مودودیؒ (1903-1979 ) کا نام سرفہرست ہے۔

ویسے تو مسلم تاریخ کے ہر دور میں نشیب و فراز نظر آتا ہے، لیکن 19ویں صدی عیسوی اس اعتبار سے بڑی منفرد ہے کہ ساڑھے چودہ سو سال کی تاریخ میں پہلی بار مسلمان ایک عالمی قوت کی شناخت اور حیثیت سے محروم ہوئے۔ اس دوران چار کمزور ممالک اورنام نہاد حکومتوں کو چھوڑ کر پورا عالمِ اسلام مغرب کی توسیع پسندانہ اور سامراجی قوتوں کے زیرتسلط آگیا۔ یہ صورتِ حال 20ویں صدی کے وسط تک جاری رہی۔ اس بات میں ذرا بھی مبالغہ نہیں کہ یہ دور مسلم تاریخ کا تاریک ترین دور تھا، جو فکری و نظریاتی اور اخلاقی انحطاط کے ساتھ ساتھ معاشی، سیاسی اور تہذیبی، گویا ہراعتبار سے اُمت کی محکومی کا دور تھا۔

پھر اسی دور میں،کسی نہ کسی پہلو سے تجدید و احیائے دین کی خدمت انجام دینے والی عظیم شخصیات میں جمال الدین افغانیؒ، مفتی محمد عبدہؒ، ابوالکلام آزادؒ، سیّد رشید رضاؒ، حسن البناؒ، علّامہ محمد اقبالؒ، سعید نورسیؒ، سیّدقطبؒ، سیّدابوالاعلیٰ مودودیؒ اور مالک بن نبیؒ جیسے نمایاں ترین رجال شامل ہیں۔ ان سب کی سوچ کا دھارا، کئی اُمور اورمعاملات میں اختلاف کے باوجود، مقصد اور ہدف کے اعتبار سے ایک جیسا تھا، اور وہ یہ تھا: اللہ کے دین کو اس کی اصل شکل میں پیش کرتے ہوئے مسلمانوں کو اس دین کے مطابق اپنی اور انسانی زندگی کی تشکیل نو اور تعمیرنوکی دعوت دی جائے۔ اللہ تعالیٰ ان سب محسنوں پر اپنی رحمت کی بارش فرمائے، اور ان کی اور ان کے رفقائے کار کی کاوشوں کو قبولیت اور فروغ عطا فرمائے۔یہی ہیں وہ رہنما کہ جن کی مساعیِ جمیلہ کے نتیجے میں، اللہ تعالیٰ کے فضل خاص سے تاریخ نے کروٹ لی اور محکومی کی تاریک اور طویل رات ختم ہوئی۔ اسلام ایک بھرپور دعوت، انقلابی قوت اور ہمہ پہلو پیغام کی حیثیت سے ایک بار پھر اپناکردار ادا کرنے کی طرف رواں دواں ہے۔

Daily Islamic Study Syllabus

In addition to presenting the Tafheem ul Quran in English, we have undertaken the essential task of keeping the ummah informed of Islamic Knowledge in a systematic manner.
2. The items of Islamic Study are :
(a) Quran
(b) Hadith
(c) Seerah
(d) Islamic Literature
3. Everyday you shall see the display of :
* 1 Ruku Translation from the Quran (Tafheem ul Quran),
* 6 to 7 Hadith (Riyad as Salihin).
* 1 page Seerah (Raheeq ul Makhtoom)
The Ebooks for these are already available in downloads section. Inshallah the other items will be added soon.
4. Friday shall be a day of revision for readers who missed their everyday Syllabus.

Bangla

http://islam.net.bd/tafheem/

সঠিকভাবে আরবি দেখার জন্য PDMS Saleem Quran Font ফন্টটি ডাউনলোড করে ইনস্টল করুন। 
আরবি কুরআনের টেক্সট তানজিল.ইনফো থেকে ডাউনলোড করা হয়েছে।আমাদের টাইপ করা বইগুলোতে বানান ভুল রয়ে গিয়েছে প্রচুর। আমরা ভুলগুলো ঠিক করার চেষ্টা করছি ক্রমাগত। ভুল শুধরানো এবং টাইপ সেটিং জড়িত কাজে সহায়তা করতে যোগাযোগ করুন আমাদের সাথে।

Towards Understanding the Quran

http://www.islamicstudies.info/tafheem.php

http://www.thafheem.net/home

http://www.thafheem.net/audio
http://www.thafheem.net/thafheem/E

http://www.thafheem.net/home

https://www.tafheem.net/

http://ift-chennai.org/tafheem-tamil/

http://ift-chennai.org/tafheem-tamil/

http://www.thafheem.net/quiz

http://www.thafheem.net/dragdrop

http://islam.net.bd/tafheem/

Democracy at Risk -Evm Manipulation